تازہ ترین

Posts Tagged “پاک افغان کشیدگی”

باب دوستی 17ویں روز بھی بند , مذاکرات آج ہو گے

پاکستان اور افغانستان کے درمیان چمن بارڈر پر سرحدی کشیدگی کے باعث پاک افغان سرحدپر باب دوستی آج 17ویں روز بھی ہر قسم کی تجارت اور آمدورفت کےلئے بند رہا، تاہم انسانی ہمد رد ی کی بنیاد پر بیمار افغان شہریوں کو پاسپورٹ پر جانے کی اجازت برقرار ہے۔

پاکستان اور افغانستان کے درمیان سرحدی کشیدگی کے خاتمے کیلئے پیر کو کابل میں ایک اعلی سطح کا اجلاس منعقد کیا جا رہا ہے جس میں پاکستان افغانستان اور امریکی حکام شرکت کریں گے۔

حکام کا کہنا ہے کہ اجلاس میں چمن بارڈر پر سرحدی تنازع کے حل کیلئے مذاکرات کئے جائیں گے، جس میں امکان ہے کہ باب دوستی کھولنے اور دو طرفہ تجارت کی بحالی کا فیصلہ کیا جائے گا۔

ادھر افغان شیلنگ سے متاثرہ دیہات کلی لقمان اور کلی جہانگیر میں سیکیورٹی فورسز موجود اور جنگ بندی برقرار ہے، جب کہ کلی لقمان اور کلی جہانگیر میں مردم شماری کا عمل اتوار کو تیسرے روز بھی جاری رہا۔

ایف سی بلوچستان کی جانب سے کلی لقمان اور جہانگیر کے متاثرین کےلئے فری میڈیکل کیمپ کا انعقاد کے موقع پر کمانڈنٹ ایف سی چمن اسکاوٹس کرنل محمد عثمان کا کہنا تھا کہ آئی جی ا یف سی بلوچستان میجر جنرل ندیم احمد انجم کی جانب سے متاثرہ دیہات لقمان اور جہانگیر کے متاثرین میں راشن اور نقد رقوم کی بھی تقسیم کی گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ کلی لقمان اور جہانگیر میں مردم شماری کا عمل کل تک مکمل کیا جائے گا۔

Read more »

پاک افغان فلیگ میٹنگ، معاملے کے حل تک سیز فائر پر اتفاق

راولپنڈی : ترجمان آئی ایس پی آر نے کہا ہے فلیگ میٹنگ میں پاکستان نے کلی جہانگیر اور کلی لقمان خالی کرنے کے افغانستان کے مطالبے کو مسترد کردیا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آج پاکستان اور افغانستان کے درمیان فلیگ میٹنگ فرینڈشپ گیٹ چمن پر ہوئی، پاکستانی وفدکی قیادت ڈی آئی جی ایف سی بلوچستان نے کی، جس میں سرحدی تنازعات پر تبادلہ خیال کیا گیا اور کسی بھی نتیجے پر پہنچنے تک سیز فائر پر اتفاق کیا گیا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ فلیگ میٹنگ میں افغان وفد نے پاکستان کو چمن کے سرحدی علاقے کلی جہانگیر اور کلی لقمان کو خالی کرنے کا مطالبہ کیا جسے مسترد کرتے ہوئے پاکستانی وفد نے موقف اختیار کیا کہ ہمارے فوجی پاکستان کی سرحدی حدود میں تعینات ہیں اور یہ علاقے پاکستانی حدود میں ہی آتے ہیں۔

اس سے قبل چمن میں مردم شماری کے موقع پر افغان فورسز کی جانب سے مقامی آبادی پر فائرنگ اور مکانات پر قبضے کی کوشش کی گئی جسے پاکستانی فورسز نے ناکام بنایا۔

Read more »

افغانستان : 2 پاکستانی سفارتکاروں کو 5 گھنٹے تک حراست میں رکھنے کے بعد رہا

افغانستان میں 2 پاکستانی سفارتکاروں کو افغان انٹیلی جنس نے 5 گھنٹے تک حراست میں رکھا اور پھر چھوڑدیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق افغانستان میں تعینات 2 پاکستانی سفارتکاروں کو افغان انٹیلی جنس ایجنسی نے گرفتار کرلیا تاہم 5 گھنٹے تک دونوں سفارتکاروں کو تحویل میں رکھنے کے بعد چھوڑ دیا گیا، ذرائع کا کہنا ہے کہ دوران حراست دونوں پاکستانی اہلکاروں کو ہراساں بھی کیا گیا جب کہ گرفتار اہلکاروں میں منیر شاہ اور حسن خانزادہ شامل تھے۔

Read more »

پاکستانی سفارتخانے کے 2 اہلکار کابل ایئرپورٹ سے لاپتہ

اسلام آباد: افغان دارالحکومت کابل میں پاکستانی سفارتخانے کے 2 اہلکار لاپتہ ہوگئے۔ دونوں کو مبینہ طور پر اغوا کیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق پاکستانی سفارتخانے کے 2 اہلکاروں کو کابل ایئرپورٹ سے مبینہ طور پر اغوا کیا گیا۔ لاپتہ سفارتی اہلکاروں میں پروٹوکول آفیسر اور ڈرائیور شامل ہیں۔

اہلکاروں کے اغوا میں مبینہ طور پر افغان خفیہ ایجنسی نیشنل ڈائریکٹوریٹ سیکیورٹی این ڈی ایس کا ہاتھ ہوسکتا ہے۔ دونوں اہلکاروں کو تشدد کا نشانہ بھی بنایا گیا۔

سفارتی اہلکاروں کے اغوا کے بعد پاکستانی سفارتخانے نے افغان حکام سے بھی رابطہ کیا ہے۔

Read more »

پاک افغان سرحد پر کشیدگی , باب دوستی آٹھویں روز بھی بند

چمن : پاک افغان سرحد پر کشیدگی برقرار ہے، جس کے باعث پاک افغان بارڈر باب دوستی آج آٹھویں روز بھی سیل ہے۔

تفصیلات کے مطابق چمن میں افغان فوج کی جارحیت اور شہری آبادی پر گولہ باری کے بعد سے پاک افغان سرحد باب دوستی آج آٹھویں روز بھی بند ہے، پاک فوج بھاری توپخانے اور ٹینکوں کے ساتھ سرحد کے اگلے مورچوں پر موجود ہے۔

چمن بارڈر کی بندش کے باعث پاک افغان دوطرفہ تجارت اور پیدل آمدورفت بھی نہیں ہو رہی۔

دوسری جانب سرحدی حد بندی سے متعلق رپورٹس کابل اور اسلام آباد کو موصول ہو چکی ہیں، ان جیالوجیکل سروے رپورٹس پر جلد فیصلہ ہونے کا امکان ہے، افغان جارحیت سے متاثرہ علاقوں کلی لقمان اور کلی جہانگیر میں مردم شماری کا رکا ہوا کام تاحال شروع نہیں کیا جاسکا تاہم شہری علاقوں میں مردم شماری پاک فوجی کی نگرانی میں جاری ہے

Read more »

پاک افغان کشیدگی، باب دوستی پانچویں روز بھی بند ، تجارتی سرگرمیاں معطل

چمن : افغان جارحیت کے بعد باب دوستی آج پانچویں دن بھی بند ہے جبکہ جیولوجیکل سروے ٹیمیں آج بھی کام جاری رکھیں گی۔

تفصیلات کے مطابق چمن میں افغانستان کی اشتعال انگیزی کے بعد آج پانچویں روز بھی باب دوستی بند ہے، جس کےباعث دوطرفہ تجارتی سرگرمیاں اورپیدل آمدورفت مکمل طورپرمعطل ہے

ذرائع کے مطابق پاک افغان سرحدی علاقے میں جیولوجیکل سروے ٹیمیں آج بھی کام جاری رکھیں گی، سروے آج یا کل مکمل کرلیا جائے گا، سروے ٹیموں کے ساتھ پاک افغان اعلیٰ سیکیورٹی حکام بھی موجود ہیں، پاکستانی وفد کی قیادت سیکٹرکمانڈرنارتھ بریگیڈ ندیم سہیل کررہے ہیں جبکہ افغان وفد کی قیادت کرنل عنائیت اللہ اورکرنل شریف کررہے ہیں۔

سیکیورٹی ذرائع کے مطابق سروے رپورٹ اسلام آباد اور کابل ارسال کی جائے گی، جیالوجیکل سروے رپورٹ آنے تک پاک افغان سرحد بند رہے گی۔

گزشتہ روز چارکلومیٹر کے علاقے کا سروے مکمل کرلیا گیا تھا، سروے میں نقشوں کے ذریعے متنازع حدود کا تعین کیا جارہا ہے، پاک افغان ٹیموں کے نقشوں میں واضح فرق نہیں  پاک افغان جیولوجیکل ٹیموں کا سروے مزید2دن جاری رہےگا

Read more »

جوابی کاروائی میں5 افغان چوکیاں تباہ , 50 فوجی ہلاک , آئی جی ایف سی

چمن : آئی جی ایف سی میجر جنرل ندیم احمد نے کہا کہ افغان فورسز نے مردم شماری میں رخنہ ڈالنے کی کوشش کی اور پاکستانی گھروں میں قبضے کی کوشش کی جنہیں خالی کرالیے گئے جس کے دوران افغانی فورسز کو بھاری نقصان اُٹھانا پرا۔

وہ کوئٹہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے صحافیوں کو بتایا کہ 4 مئی کو فرنٹیئر کور اور پاک آرمی نے آپریشن شروع کیا کہ اور اگلے ہی روز علاقے کو خالی کروالیا جس کے دوران افغان فورس کے 50 سپاہی ہلاک ہوئے اور 100 سے زائد زخمی ہوئے جب کہ 5 افغان پوسٹوں کو تباہ کردیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے برے وقت میں افغانستان کا ساتھ دیا ہے اور افغان فورسز کے جانی نقصان پر ہمیں دکھ بھی ہے لیکن پاکستان کی سالمیت اور پاک سرزمین کے ایک ایک انچ کی حفاظت ہماری اولین ترجیح ہے اسی طرح سرحدی علاقوں میں کسی بھی قسم کی خلاف ورزی ناقابل قبول ہے۔

میجر جنرل ندیم احمد نے کہا کہ مردم شماری کے آغاز سے قبل ہی افغان فورسز کو آگاہ کردیا گیا تھا اور ان کی جانب سے تاخیر کو بھی برداشت کر کے دو دن بعد مردم شماری کا آغاز کیا اس کے باوجود مردم شماری کے کام میں رخنہ ڈالنے اور شہری آبادی پر فائرنگ کر کے 10 افراد کی شہادت کے بعد آپریشن کا فیصلہ کیا تاہم اس کے باوجود بھاری پہتھیار استعما نہیں کیے کہ مبادا دونوں اطراف کی شہری آبادیوں کو نقصان نہ پہنچے۔

ڈی ایف سی نے بتایا کہ افغان حکومت کی درخواست پر 5 مئی کو فائر بندی کی تاہم افغان حکومت پر واضح کردیا ہے کہ سرحد پر کسی قسم کی کوئی خلاف ورزی برداشت نہیں کی جا سکے گی آئندہ بھی کوئی کوشش کی گئی تو بھرپور جواب دیں گے۔

Read more »

پاک افغان سرحد پر تیسرے روز بھی کشیدگی برقرار

چمن :پاک افغان سرحد پرتیسرے روز بھی کشیدگی برقرار ہےجبکہ چمن کے سرحدی دیہات سے شہریوں کومحفوظ مقامات پرمنتقل کردیاگیاہے۔

تفصیلات کےمطابق چمن میں پاک افغان سرحد پرتیسرے روز بھی کشیدگی برقرار ہے۔پاک افغان بارڈرکی بندش کے باعث تجارتی سرگرمیاں بھی معطل ہیں۔

ضلعی انتظامیہ کی ہدایت پر سرحد کے قریب سیکڑوں دیہات خالی کرالیےگئےہیں اورہزاروں خاندانوں کو محفوظ مقامات پرمنتقل کردیاگیاہے۔

پاکستانی حدود میں پاک فوج اور ایف سی کے تازہ دم دستے ہر قسم کی صورت حال کنٹرول کرنے کےلیے موجود ہیں، چمن کی فضائی نگرانی بھی کی جارہی ہے۔

خیال رہےکہ باب دوستی پرہرقسم کی تجارتی سرگرمیاں اورپیدل آمد ورفت بھی معطل ہے،مال بردارگاڑیوں،کنٹینرزکو شہرکی جانب موڑدیا گیا،دو روزکے دوران دو فلیگ میٹنگ بھی بےنتیجہ رہیں۔

پاک فوج بھاری توپ خانےکےساتھ اگلےمورچوں پرموجودہے۔افغان شیلنگ سےمتاثرہ علاقوں میں پاک فوج اورایف سی اہلکارتعینات ہیں۔

Read more »

پاک افغان سرحد پر کشیدگی برقرار، باب دوستی دوسرے روز بھی بند

چمن : پاک افغان سرحد پر کشیدگی برقرار ہے ، گن شپ ہیلی کاپٹرز سے بارڈر کی نگرانی جاری ہے جبکہ چمن کے سرحدی علاقے سے آبادی کو محفوظ مقامات پر منتقل کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چمن میں افغان فوج کی اشتعال انگیزی گولہ باری کے بعد آج دوسرے روز بھی باب دوستی بند ہے، علاقے میں خوف و ہراس پایا جاتاہے، آمدورفت اورتعلیمی ادارے بھی آج بند ہیں جبکہ افغان فورسزکی شیلنگ سے متاثرہ علاقوں میں پاک فوج اورایف سی اہلکار تعینات کر دیئے گئے ہیں۔

بلوچستان کے علاقے چمن میں افغان بارڈر فورس کی بلا اشتعال کارروائی کے بعد زیرپوائنٹ سے ملحقہ علاقے خالی کرالیے گئے ہیں ۔ سرحدی دیہات سے آبادی محفوظ مقامات کی جانب نقل مکانی کرگئی ہے۔ چمن میں تعلیمی ادارے غیرمعینہ مدت کے لیے بند رکھنے کا اعلان کیا گیا ہے۔

پاک افغان سرحد پر باب دوستی ہرقسم کی آمد و رفت کے لیے بند، تجارتی سرگرمیاں اور نیٹو سپلائی معطل ہیں ۔

پی ڈی ایم اے بلوچستان نے چمن میں ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے ایمرجنسی سیل قائم کردیا ہے، جہاں پانچ ایمبولینس،طبی عملہ اور دوائیں موجود ہیں، ان علاقوں میں رات گئے تک پی ڈی ایم اے کے اٹھائیس ٹرک راشن ،خیمے اور دوائیں لے کر پہنچے، امدادی سامان آج متاثرہ علاقوں میں روانہ کیا جائے گا۔

Read more »

Scroll Up