تازہ ترین

Posts Tagged “کلبھوشن یادیو”

عالمی عدالت کلبھوشن کو رہا نہیں کرنا چاہتی: خاور قریشی

اسلام آباد: عالمی عدالت انصاف میں کلبھوشن یادیو کے کیس میں پاکستان کے وکیل خاور قریشی نے کہا ہے کہ کلبھوشن کہیں نہیں جا رہا۔ وزارت خارجہ اس معاملے پر تفصیلی بیان جاری کرے گی

تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں سپریم کورٹ کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وکیل خاور قریشی کا کہنا تھا کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن کہیں نہیں جارہا۔ وزارت خارجہ اس معاملے پر تفصیلی بیان جاری کرے گی۔

ان کے مطابق عالمی عدالت کلبھوشن کو رہا کرنا نہیں چاہ رہی

خاور قریشی کی گفتگو کے دوران ان کے عملے کی صحافیوں سے تلخ کلامی بھی ہوئی۔ عملے کے ایک رکن نے ایک صحافی کا موبائل فون بھی توڑ دیا جس پر صحافیوں نے شدید احتجاج کیا

Read more »

پاک بھارت معاہدے کے تحت کلبھوشن تک قونصلررسائی نہیں دی جاسکتی، رحمان ملک

لاہور : سابق وزیر داخلہ رحمان ملک نے کہا ہے کہ کلبھوشن کے معاملے میں عالمی عدالت انصاف نے اختیارات سے تجاوز کیا کیوں کہ پاک بھارت معاہدے کے مطابق کسی دہشت گرد کو قونصلیٹ تک رسائی نہیں دی جاسکتی۔

لاہور میں پیپلز پارٹی رہنما فائزہ ملک کے گھر آمد پرمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رحمان ملک نے کہا کہ بھارت کی جانب سے کلبھوشن کا معاملہ عالمی عدالت میں لیجانے پر پاکستان فائدہ اٹھا سکتا ہے لیکن آئی سی جی کا فیصلہ پاکستان کا مقدمہ لڑنے والوں کی ناکامی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کلبھوشن دہشت گرد ہے اسے پھانسی ضرور ہونی چاہئے مودی خود دہشت گردوں کا امام ہے اوراسی طرح کشمیرمیں مظالم، بھارت کی جانب سے پانی کی بندش اور بنگلہ دیش کو الگ کرنے کا معاملہ بھی عالمی عدالت کے سامنے رکھنا چاہئے تاکہ بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب ہو۔

Read more »

کلبھوشن کیس : عالمی عدالت میں شامل بھارتی جج نے جانبداری دکھا دی

اسلام آباد: عالمی گیارہ رکنی پینل میں شامل بھارتی جج نے جانبداری ظاہر کردی عدالت انصاف میں بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کی پھانسی رکوانے سے متعلق بھارتی درخواست کی سماعت کرنے والے گیارہ رکنی پینل میں شامل بھارتی جج نے جانبداری ظاہر کردی۔

عالمی عدالت انصاف کی جانب سے پھانسی پر حکم امتناع جاری کرنے والیے 11 ججز میں سے ایک بھارتی جج دلویر بھنڈاری بھی تھے جن کے بیان نے مقدمے کی شفافیت مشکوک بنا دی ہے ۔

جج دلویربھنڈاری نے انٹرویومیں کہہ دیا کہ عدالت کا فیصلہ بھارت کی عظیم سفارتی کامیابی ہے۔ بھنڈاری نے اس بات پربےحد خوشی کا اظہارکیا ہے کہ عالمی عدالت نے کلبھوشن کو پھانسی سے بچالیا۔۔

عالمی عدالت انصاف پینل کے بھارتی جج کا جانبدارانہ بیان ہے کہ بےحد خوشی ہے کہ عالمی عدالت نے کلبھوشن کو پھانسی سے بچالیا توسوالات اٹھتے ہیں کہ کیا جانبدارجج کلبھوشن مقدمہ کی سماعت کے اہل ہیں؟  کیا جج کسی فریق کیلئے ذاتی خوشی کا اظہارکرسکتا ہے؟ اور کیا کوئی جج حتمی فیصلہ آنے تک ذاتی رائے دے سکتا ہے؟۔

واضح رہے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو 3 مارچ 2016 کو گرفتار کیا گیا۔ کلبھوشن کی گرفتاری بلوچستان میں انٹیلی جنس آپریشن کے دوران عمل میں آئی تھی۔ بھارتی نیوی کا حاضر سروس افسر اور خفیہ ایجنسی ’’را ‘‘کا یہ ایجنٹ پاکستان میں حسین مبارک پٹیل کے نام سے سرگرمیاں کر رہا تھا جسے کراچی اور بلوچستان میں تخریب کاری کا ٹاسک دیا گیا تھا۔گرفتاری کے بعد کلبھوشن نے پاکستان میں دہشت گردی اورانتشارپھیلانے کا اعتراف کیا جس کے بعد آرمی ایکٹ کے سیکشن 59 اور سیکرٹ ایکٹ کی شق 3 کے تحت کلبھو شن کے خلاف مقدمہ چلایا گیا۔ کلبھوشن کا فیلڈ جنرل کورٹ مارشل کیا گیا اور گرفتاری کے ایک سال ایک ماہ اور تین دن بعد  اسے سزائے موت سنائی گئی۔

آرمی چیف نے را ایجنٹ کی سزائے موت کی توثیق کی۔ کلبھوشن کو پاکستان کی سالمیت،جاسوسی اور انتشار پھیلانے کے جرم میں سزا ئے موت سنائی گئی کیونکہ فیلڈ جنرل کورٹ مارشل میں دوران سماعت کلبھوشن پرتمام الزامات درست ثابت ہوئے۔

کلبھوشن کی سزائے موت کے خلاف بھارت نے 10 مئی 2017 کو عالمی عدالت انصاف سے رجوع کیا اور کلبھوشن کی سزائے موت پر عملدرآمد رکوانے کی درخواست کی۔ 14 مئی کو پاکستان نے عالمی عدالت انصاف میں بھارتی درخواست کو چیلنج کر دیا۔ 15 مئی کو عالمی عدالت انصاف نے سماعت کے بعد کیس کا فیصلہ محفوظ کر لیا تھا جسے 18 مئی کو سنایا گیا۔

فیصلے میں عالمی عدالت انصاف نے بھارتی درخواست کو قابل سماعت قرار دیتے ہوئے پھانسی کی سزا پر حکم امتناع جاری کیا تھا

Read more »

عالمی عدالت نے کلبھوشن کو قونصلر رسائی دینے کا حکم نہیں دیا، عبدالباسط

 نئی دہلی: بھارت میں تعینات پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط نے کہا ہے کہ کلبھوشن یاددو دہشت گرد ہے، عالمی عدالت نے بھارتی جاسوس کو قونصلر تک رسائی سے متعلق حکم نہیں دیا۔

بھارتی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے عبد الباسط نے کہا کہ پاکستان آئی سی جے سے معاہدے کے تحت احکامات کو مانے گا مگر قومی سلامتی کے معاملے پر کوئی سمجھوتا نہیں کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ کلبھوشن دہشت گرد ہے، عالمی عدالت انصاف کا حکم نامہ عارضی ہے اور اس کا حتمی فیصلے سے کوئی تعلق نہیں، آئی سی جے نے قونصلر رسائی سے متعلق کوئی حکم جاری نہیں کیا

Read more »

پاکستان کی جانب سے کلبھوشن کیس لڑنے والے خاور قریشی بھارت کے وکیل تھے

اسلام آباد: عالمی عدالتِ انصاف میں پاکستان کی جانب سے کلبھوشن کیس لڑنے والے خاور قریشی بھارت کے وکیل رہ چکے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق عالمی عدالتِ انصاف میں کلبھوشن کیس میں پاکستان کی جانب سے نمائندگی کرنے والے وکیل خاور قریشی کو 2005 میں کانگریس حکومت نے ایک مقدمے کے لیے نامزد کیا تھا۔

اینزون، بیک ٹیل، جنرل الیکٹرک نے بھارت کے خلاف 5 ارب ڈالر کا کیس دائر کیا تھا جس پر کانگریس حکومت نے خاور قریشی کی خدمات بھی حاصل کی تھیں۔

یاد رہے عالمی عدالتِ انصاف میں کلبھوشن کیس میں پاکستان کی جانب سے نمائندگی کرنے والے وکیل خاور قریشی پر اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے بھی تنقید کی جارہی ہے جبکہ خبریں یہ بھی زیر گردش ہیں کہ انہوں نے مقدمہ لڑنے کے عوض بھاری فیس حاصل کی۔

Read more »

کلبھوش کو پاکستانی آئین کے مطابق سزا دی : چودھری نثار

پشاور : وزیرداخلہ چوہدی نثار نے بھارت کو دو ٹوک پیغام دیا ہے کہ کلبھوشن معاملے پر کسی قسم کا ابہام نہیں، سب ایک پیج پر ہیں، کلبھوش کو پاکستانی آئین کے مطابق سزا دی اور ہم اپنے قانون کے مطابق ہی کیس منطقی انجام تک پہنچائیں گے، کلبھوشن کو بروقت نہ پکڑتے تو بہت تباہی ہوسکتی تھی۔

تفصیلات کے مطابق ورسک ٹریننگ اکیڈمی میں فرنٹیئرکورکی پاسنگ آؤٹ پریڈ ہو ئی، وزیرداخلہ چوہدری نثار تقریب میں مہمان خصوصی تھے، اس موقع پر وفاقی وزیر داخلہ نے پریڈکا معائنہ کیا اور بہترین کارکردگی پر جوانوں کواعزازات سے نوازا

وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کلبھوشن سےمتعلق کسی قسم کا ابہام نہیں، کلبھوشن غیر ملکی جاسوس ہے اور پاکستان میں دہشتگردی کا مرتکب ہے، کلبھوشن کوبروقت نہ پکڑتےتوبہت تباہی ہوسکتی تھی، پاکستان کلبھوشن جاسوس کے خلاف کارروائی کرے گا

Read more »

کلبھوشن کیس: تحریک انصاف کے وزیر اعظم سے 7 سوالات ، جواب ضرور لیں گے

اسلام آباد: عالمی عدالتِ انصاف کی جانب سے بھارتی جاسوس کلبھوشن کی سزا کے خلاف حکم امتناعی آنے کے بعد تحریک انصاف نے وزیر اعظم سے 7 سوالات پوچھ لیے۔

تحریک انصاف کی جانب سے پوچھے جانے والے سوالات میں نوازشریف سے پوچھا گیا ہے کہ

سوال نمبر 1’’اختیارات کے باوجود وزیر اعظم نے عالمی عدالت انصافِ میں  ایڈہاک جج مقرر کیوں نہیں کیا؟ ‘‘۔

سوال نمبر 2’’دفتر خارجہ نے ضروری قانونی مشاورت حاصل کیوں نہیں کی‘‘

سوال نمبر 3’’کلبھوشن کیس میں ایسے وکیل کو عالمی عدالتِ انصاف کیوں بھیجا گیا جس نے آئی سی جے کا کبھی کوئی مقدمہ لڑا ہی نہیں؟‘‘۔

سوال نمبر 4 ’’پاکستان نے اپنا تحریری دفاع 15 مئی سے پہلے کیوں جمع نہیں کروایا

سوال نمبر 5 ’’حکومت نے قطر سے تعلق رکھنے والے وکیل کو ہی کلبھوشن کیس کے لیے کیوں منتخب کیا‘‘۔

سوال نمبر 6 ’’عالمی عدالت کی جانب سے ملے ہوئے 90 منٹ پورے کیوں نہیں کئے گئے اور صرف 50 منٹ میں ہی دلائل مکمل کیوں کئے گئے۔

سوال نمبر 7 ’’ سجن جنڈال کی پاکستان آمد اور کلبھوشن یادیو کیس مییں شکست کا آپس میں کیا تعلق ہے

اپوزیشن کی دوسری بڑی جماعت نے کہا ہے کہ کلبھوشن کے معاملے پر وضاحت حاصل کیے بغیر تحریک انصاف خاموش نہیں بیٹھے گی ساتھ ہی پی ٹی آئی نے مطالبہ کیا کہ وزیراعظم قوم کو درج بالا سوالات کے جوابات دیں۔

 

Read more »

کلبھوشن فیصلہ: عالمی عدالت میں ایک بھی جج مسلم ملک سے نہیں تھا

اسلام آباد: عالمی عدالت میں کلبھوسن یادیو کیس میں بھارت کے حق میں فیصلہ دینے والی عدالت میں ایک بھی جج مسلم ملک سے نہیں تھا

تفصیلات کے مطابق عالمی عدالت انصاف میں کلبھوشن یادیو کیس کا فیصلہ جن ججز دیا ان میں بھارتی، روسی، امریکی، چینی، فرانسیسی و دیگر ممالک کے ججز شامل ہیں لیکن ایک بھی مسلم ملک سے نہیں۔

عالمی عدالت کے سربراہ رونی ابراہیم کا آبائی تعلق مصر سے تھا تاہم اب وہ فرانس کے شہری ہیں جب کہ بینچ میں بھارتی سپریم کورٹ کے سابق جج دلویر بھنڈای بھی شامل ہیں۔

دیگر ججز میں برازیل، روس، امریکا، چین، آسٹریلیا، اٹلی، جاپان، یوگنڈا اور جمیکا کے ججز کلبھوشن یادیو کیس کے بینچ کا حصہ تھے لیکن کسی بھی مسلمان ملک سے کوئی جج شامل نہیں تھا۔

Read more »

عالمی عدالت جیسے اداروں میں مسلمانوں کو انصاف نہیں ملتا، بیرسٹرفروغ نسیم

اسلام آباد : بیرسٹرفروغ نسیم نے کہا ہے کہ یہ بات ثابت ہوچکی ہے کہ عالمی عدالت انصاف جیسےفورمز میں مسلمانوں کو انصاف نہیں ملتا تاہم یہ فائدہ ضرور ہوا کہ دہشت گرد کلبھوشن ایک اسٹیٹ ایکٹر ثابت ہوگیا ہے۔

نجی ٹی وی چینل کو دیے گئے انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کو آئی سی جےمیں جانا ہی نہیں چاہیے تھا اب اگر آئی سی جےکافیصلہ نہ مانا توسلامتی کونسل میں پاکستان مخالف قرارداد آئے گی اس لیے آئی سی جےمیں کیس نہ لڑنا ہی عقل مندی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں بھارت نے بھی عالمی عدالت انصاف کے اختیار کو چیلنج کیا تھا اور کئی معاملات میں بھارت بھی آئی سی جے میں نہیں گیاتھا تاہم اب پاکستان کو آئی سی جےسے نکلنے کیلئے وسیع لابنگ کرنا ہوگی۔

بیرسٹرفروغ نسیم نے کہا کہ آئی سی جے میں بھارت کے خلاف مضبوط کیس پیش کرسکتے تھے لیکن ایسا نہ ہوسکا اگر کلاز آئی کا استعمال کیا جاتا تو یہ دن نہ دیکھنا پڑتا اور بھارتی دہشت گرد کلبھوشن کومثال کے طور پر پیش کرناچاہیے تھا اور اگر کلبھوشن کیس ہو سکتا ہے تو شکیل آفریدی کو بھی رہائی مل سکتی ہے۔

 

Read more »

عالمی عدالت میں کیس تو ابھی شروع بھی نہیں ہوا , پاکستانی وکیل

کراچی: عالمی عدالت انصاف میں پاکستانی کونسل میں شامل وکیل معظم علی نے کہا ہے کہ صرف عدالتی رولنگ سے نتائج اخذ کرنا ٹھیک نہیں، کمانڈر جادیو کا کیس تو ابھی شروع ہی نہیں ہوا، بھارتی درخواست میں ٹھوس ثبوت موجود نہیں جب کیس شروع ہوگا تو پاکستانی وکلا بھرپور دلائل دیں گے۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج جو عدالتی رولنگ ہوئی وہ بھارتی درخواست کے قابل سماعت ہونے پر نہیں تھی، آج عدالت نے کہا کہ وہ کلبھوشن کیس میں عبوری اقدامات لیں گے

ابھی شروع ہی نہیں ہوا ہے، کلبھوشن کیس پر پاکستانی وکلا پر اعتماد ہے، بھارتی درخواست میں کوئی ٹھوس مواد نہیں، جب کیس کی سماعت ہوگی تو پاکستانی وکیل مزید دلائل دیں گے

Read more »

عالمی عدالت نے مکمل فیصلہ آنے تک کلبھوشن کی پھانسی روک دی

ہیگ: عالمی عدالتِ انصاف نے کلبھوشن کیس میں اپنا فیصلہ سنا دیا‘ فیصلے میں کہا گیا کہ پاکستان بھارت کو کلبھوشن تک قونصلر رسائی دے‘ اور امید ہے کہ پاکستان عالمی عدالت کا مکمل آنے تک سزا نہیں دی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق عالمی عدالتِ انصاف کے گیارہ ججز پر مشتمل جیوری نے یہ فیصلہ سنایا جس کی قیادت رونی ابراہم نامی جج کررہے تھے۔

جج رونی ابراہم نے فیصلہ سناتے ہوئے  کہا کہ پاکستان اور28 ستمبر 1977 سے ویانا کنونشن کا حصہ ہیں اور عدالت میں ثابت ہوا کہ دونوں کا موقف بالکل الگ ہے۔

آرٹیکل ون کے تحت عالمی عدالت کو اس مقدمے کی سماعت کا اختیار ہے۔

پاکستانی قانون کےمطابق کلبھوشن کو 40 دن میں اپیل دائرکرنی ہوگی‘ معلوم نہیں ہوسکاکہ کلبھوشن نےاپیل دائرکی یانہیں۔

امید ہےعالمی عدالت کامکمل فیصلہ آنےتک کلبھوشن کوسزانہیں دی جائےگی۔

پاکستان کلبھوشن سےمتعلق تمام اقدامات سےعدالت کوآگاہ کرے۔

جج رونی نے کہا کہ عدالت صرف تب ہی ریلیف دے سکتی ہے جب بھارت ک طرف سے شواہد مکمل ہوں بھارت ہمیں مقدمے کے میرٹ پر مطمئن نہیں کرپایا۔

فیصلے سے پہلے عدالت نےکلبھوشن یادو کیس پر پاکستان اور بھارت دونوں کا موقف سنایا جس میں کہا گیا کہ پاکستان نے بھارت کو آگاہ کیا تھا کہ قونصلر رسائی کے بارے میں بھارت کا ردعمل دیکھ کرفیصلہ کیا جائے گا۔

 

Read more »

کلبھوشن یادیو : عالمی عدالت اپنا فیصلہ سنانے کے لئے تیار ، بھارت اور پاکستان دونوں پرامید

عالمی انصاف کی عدالت آئی سی جے نے بھارت کی اپیل پر کلبھوشن یادیو تک بھارت کی رسائی دینے یا نہ دینے سے متعلق کیس کی سماعت مکمل کرنے کے بعد اپنا محفوظ فیصلہ جمعرات 18 مئی بروز جمعرات پاکستانی وقت کے مطابق شام 4 بجے سنایا جائے گا۔

بھارت نے عالمی عدالت میں موقف اختیار کیا ہے کہ کلبھوشن یادیو نہ صرف بے قصور ہے بلکہ پاکستان نے اسے ایران کی حدود سے گرفتار کیا ہے اور اس پر مقدمہ چلائے بغیر سزائے موت سنا دی گئی ہے۔ لہذا اسے کلبھوشن تک رسائی فراہم کی جائے اور اس کو رہا کرایا جائے

جبکہ پاکستان کے وکیلوں نے بھارتی موقف کے خلاف مضبوط دلائل دیتے ہوئے کہا کہ کلبھوشن یادیو کو نہ صرف ایران سے جعلی نام اور پاسپورٹ پر پاکستان میں داخل ہوتے ہوئے نہ صرف رنگے ہاتھوں پکڑا گیا ہے بلکہ کلبھوشن یادیونے اپنے جرائم کا اعتراف کرتے ہوئے بلوچستان اور کراچی میں دہشتگردوں کی سرپرستی کرنے اور بڑے پیمانے پر پاکستانیوں کا قتل عام کروانے کا بھی اعتراف کیا ہے۔ اس سلسلے میں پاکستانی وکلا کی جانب سے ثبوت کے طور پر کلبھوشن کا اعترافی وڈیو بیان بھی چلانے کی اجازت مانگی جو عالمی عدالت نے مسترد کردی۔ 

پاکستانی وکلا کی جانبے سے موقف اختیار کیا گیا کہ ویانا کنونشن کے تحت عالمی عدالت کلبھوشن کا کیس نہیں سن سکتی اور یہ اس دائرہ اختیار میں نہیں آتا۔

عالمی عدالت نے دنوں فریقین کے دلائل سننے کے بعد اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا تھا جسے اب کل سنایا جائے گا۔

Read more »

بھارتی وکیل نے کلبھوشن یادیو کا مقدمہ لڑنے کے لیے ایک روپیہ فیس وصولی

بھارت: پاکستان میں گرفتار جاسوس کلبھوشن یادیو کو سزائے موت سنائے جانے کے بعد اپنے شہری کو پاکستانی فوج کی قید سے آزاد کروانے کے لیے تمام حربے آزما لیے ہیں۔
بھارت نے عالمی عدالت انصاف میں کلبھوشن یادیو کو رہائی اوراسے سزا سے استثنیٰ دلوانے کے لیے رجوع کیا ہے۔ بھارت کے سب سے مہنگے ترین وکیل ہریش سالو کو عالمی عدالت انصاف میں کلبھوشن یادیو کا مقدمہ لڑنے کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں بھارتی وزیر کارجہ سشما سوراج نے بتایا کہ ہریش سالو نے کلبھوشن یادیو کا مقدمہ لڑنے کے لیے ایک روپیہ فیس لی۔ یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ ہریش سالو کی آئینی ، کمرشل اور ٹیکسیشن کے قوانین میں مہارت رکھتے ہیں۔ اور ان کا شمار بھارت کے مہنگے ترین وکلا میں ہوتا ہے۔
بھارت کی ایک ویب سائٹ کے مطابق 2016ء میں ہریش سالو ایک پیشی کے 6 سے 15 لاکھ روپے چارج کرتے تھے اور کبھی تو ان کے پورے دن کی فیس 60 لاکھ روپے بھی ہوتی ہے۔ ہریش سالو کاگریس سے تلق رکھنے والے ایک معروف سیاستدان این کے پی سالو کے صاحبزادے ہیں۔ جبکہ ان کے دادا بھی وکالت کے پیشے سے منسلک تھے جو کرائم کیسز پر عبور رکھتے تھے۔
 
 
 

Read more »

بھارت عالمی عدالت میں کیا لینے آیا ہے؟ عالمی عدالت کا فیصلہ محفوظ

دی ہیگ: پاکستان نے کہا ہے کہ ویانا کنونشن کے تحت عالمی عدالت انصاف کا دائرہ اختیار محدود ہے اور یہ عدالت کلبھوشن کا معاملہ نہیں سن سکتی، سمجھ نہیں آتا بھارت عالمی عدالت میں کیا لینے آیا ہے؟ عدالت بھارتی درخواست مسترد کرے، عدالت نے دوطرفہ دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا جو جلد از جلد سنایا جائے گا۔

یہ بات پاکستانی وکلا نے عالمی عدالت انصاف (آئی سی جے) میں اپنے دلائل دیتے ہوئے کہی۔

نیدر لینڈ کے شہر ہیگ میں قائم عالمی عدالت انصاف میں بھارتی دہشت گرد کلبھوشن سے متعلق  بھارتی درخواست کی سماعت کئی گھنٹے جاری رہی۔ پہلے بھارتی وکلا نے اپنے دلائل مکمل کیے بعدازاں پاکستانی وکلا نے اپنے موقف کی حمایت میں دلائل دیے۔

پاکستانی وکلاء کی جانب سے عدالت جانے والے 5 رکنی وفد میں معظم احمد، محمد فیصل، فراز حسین، خاور قریشی اور اسد رحیم شامل ہیں۔

پاکستان کی جانب سے خاور قریشی پاکستانی وکیل اور اسد رحیم جونیئر وکیل ہیں، جوزف ڈیک بھی لیگل اسسٹنٹ کے طور پر پاکستانی وفد کے ساتھ ہیں۔

پاکستان کی طرف سے دلائل دیتے ہوئے وکیل خاور قریشی نے کہا کہ دہشت گردوں سے نہیں ڈریں گے، تمام تنازعات کا پرامن حل چاہتے ہیں،کلبھوشن صرف جاسوس نہیں بلکہ پاکستان میں دہشت گردی کارروائیوں میں ملوث رہا ہے۔

خاور قریشی نے کہا کہ کلبھوشن یادیو کے پاس اپنی صفائی دینے کے لیے 150 دن تھے، اس کی گرفتاری پربھارت کوبھی آگاہ کیا گیا تھا کہ کلبھوشن معصوم شہریوں کو نشانہ بنانے کا اعتراف کرچکا ہے

Read more »

المی عدالت میں بھارتی جاسوس کلبھوشن سے متعلق درخواست کی سماعت

دی ہیگ: عالمی عدالت میں بھارتی جاسوس کلبھوشن سے متعلق درخواست کی سماعت شروع، کلبھوشن کے معاملے پر پاکستانی وکلا پانچ رکنی ٹیم دلائل دے گی۔

پڑوسیوں کے ساتھ ناانصافی کرنے والا بھارت کلبھوشن کی پھانسی رکوانے عالمی عدالت انصاف پہنچ گیا، سماعت کے دوران بھراتی وکیل نے کہا کہ بھارت نے پاکستان سے کئی بار کلبھوشن معاملےپر رسائی مانگی، آئی سی جے کلبھوشن کی سزائےموت کے فیصلے پر عملدرآمد روکے۔

اٹارنی جنرل آفس کے مطابق پاکستانی وکلا پانچ رکنی ٹیم شام چھ بجے دلائل دے گی، جس میں بھارتی پٹیشن کے ناقابل سماعت ہونے کا نکتہ اٹھایا جائے گا، پاکستانی وکلا کی ٹیم نے ٹھوس دلائل کی تیاری کرتے ہوئے پوائنٹس میں شامل کیا ہے کہ کلبھوشن صرف جاسوس نہیں ، بلکہ پاکستان میں دہشت گردی کاروائیوں میں ملوث رہاہے، ٹیم نے بھارتی نیوی کے حاضر افسر کا اعترافی بیان میں بطور ثبوت دلائل میں شامل کیا ہے

ثبوتوں اور شواہد پیش کرنے کے ساتھ پاکستان عالمی عدالت انصاف کے اختیارکو چیلنج کرے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ عالمی عدالت کے پاس اس طرح کے کیس سننے کا اختیارنہیں ہے، ماضی میں پاک بحریہ کےطیارہ گرانے پر پاکستان عالمی عدالت گیا، پاکستان کےعالمی عدالت جانے پر بھارت نے منع کردیا تھا

Read more »

کلبھوشن کیس: عالمی عدالتِ انصاف 15 مئی کو سماعت کرے گا

ہیگ: عالمی عدالتِ انصاف (آئی سی جے) نے اعلان کیا ہے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کے مقدمے کی سماعت 5 مئی بروز پیر کی جائے گی۔

آئی سی جے کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ’’کلبھوشن سے متعلق کیس کی سماعت مرکزی دفتر امن محل میں عوامی سطح پر کی جائے گی اور کارروائی براہ راست بھی کی جائے گی۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ مقدمے کی سماعت کے آئی سے جے کی ویب سائٹ اور اقوام متحدہ کے ویب ٹی وی کے علاوہ مقامی چینلز پر بھی نشر کی جائے گی

Read more »

بھارت کے بعد ایک اور اسلامی ملک نے کلبھوشن تک رسائی مانگ لی

اسلام آباد : برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں تعینات ایرانی قونصلر جنرل محمد رفیق نے دو روز قبل پریس کانفرنس میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے بتایا ہے ایران نے گرفتار بھارتی جاسوس کلبھوشن سے پوچھ گچھ کیلئے پاکستان حکام سے درخواست کی ہے اور بھارتی جاسوس سے متعلق حکومت پاکستان سے دستاویزات فراہم کرنے کی بھی درخواست کی گئی ہے۔

واضح رہےبھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو ایران سے پاکستان میں داخلے کے دوران پاکستانی حساس اداروں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے گرفتار کیا تھا جس نے گرفتاری کے بعد اعترافی بیان میں پاکستان میں دہشتگردوں سے روابط اور دہشتگرد کارروائیوں کی منصوبہ بندی کے علاوہ دیگر جرائم کا بھی اعتراف کیا تھا۔ خیال رہے کہ کلبھوشن یادیو بھارتی نیوی میں کمانڈر اور را میں فرائض سرانجام دے رہا تھا جسے پاکستان کے خلاف ایران کے علاقے چاہ بہار میں ایک مسلمان تاجر کے روپ میں بھیجا گیا تھا جہاں سے وہ پاکستان کے خلاف سرگرمیوں کو نافذ کر وا رہا تھا ۔ گرفتاری کے بعد کلبھوشن کے خلاف فوجی عدالت میں فیلڈ جنرل کورٹ مارشل کی کارروائی عمل میں لاتے ہوئے مقدمے کی سماعت کی گئی اور جرم ثابت ہونے پر سزائے موت کی سزا سنائی گئی ہے۔ سزا کا فیصلہ سامنے آنے کے بعد اپنے فوری ردعمل میں بھارت کا کہنا تھا کہ اگر کلبھوشن یادیو کی سزائے موت پر عملدرآمد ہوا تو یہ ’پہلے سے سوچا سمجھا قتل‘ تصور کیا جائے گا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی دفتر خارجہ نےپاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط کو طلب کرکے کلبھوشن یادیو کو سزائے موت سنائے جانے کو ‘مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے انہیں احتجاجی مراسلہ بھی دیا تھا۔کلبھوشن یادیو کو 3 مارچ 2016 کو حساس اداروں نے بلوچستان کے علاقے ماشکیل سے گرفتار کیا تھا۔بھارت نے کئی مرتبہ پاکستان سے کلبھوشن تک قونصلر رسائی مانگی تھی جسے پاکستان نے سختی سے مسترد کر دیا تھا تاہم اب ایرانی قونصلر جنرل کے بیان کے بعد ایران دوسرا ملک ہو گا جو بھارتی جاسوس کلبھوشن تک رسائی چاہتا ہے۔

Read more »

کلبھوشن تک رسائی ، بھارتی مطالبہ مسترد

اسلام آباد: پاکستان نے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو تک رسائی کے بھارتی مطالبے کو ایک بار پھر مسترد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کی درخواست پر بھارتی ہائی کمشنر اور سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ کے درمیان ملاقات ہوئی۔ ملاقات میں بھارتی ہائی کمشنر نے کلبھوشن تک رسائی کا مطالبہ دہرایا۔

بھارتی ہائی کمشنر گوتم بمبا والا نے کلبھوشن یادیو سے متعلق فیصلے پر نظر ثانی کی اپیل اور درخواست پیش کی۔ یہ اپیل اور درخواست کلبھوشن یادیو کی ماں کی جانب سے جمع کروائی گئی۔

تہمینہ جنجوعہ نے معاملے پر پاکستانی مؤقف سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ 2008 کے دو طرفہ معاہدے کے تحت جاسوس تک رسائی نہیں دی جاسکتی۔

سیکریٹری خارجہ کا کہنا تھا کہ کلبھوشن بھارتی خفیہ ایجنسی را کے لیے کام کر رہا تھا۔ کلبھوشن کو رنگے ہاتھوں گرفتار کیا۔

انہوں نے دو ٹوک جواب دیتے ہوئے کہا کہ کلبھوشن جاسوسی، دہشت گردی اور دہشت گردوں کی مالی معاونت کا اعتراف کر چکا ہے۔

ملاقات کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے بھارتی ہائی کمشنر کا کہنا تھا کہ کلبھوشن یادیو سے متعلق درخواست باضابطہ طور پر جمع کروا دی ہے تاکہ اسے جلد سے جلد رہا کیا جاسکے۔

ایک صحافی نے ان سے سوال کیا کہ کلبھوشن دہشت گرد ہے، کیا آپ سمجھتے ہیں ایسے لوگوں کو رہا کردیا جانا چاہیئے؟ جس پر گوتم بمبا والا سوال کا جواب دیے بغیر وہاں سے روانہ ہوگئے۔

یاد رہے کہ 10 اپریل کو بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو سزائے موت سنائی گئی تھی۔ کلبھوشن کو فیلڈ جنرل کورٹ مارشل کی جانب سے پاکستان میں جاسوسی، انتشار پھیلانے پر سزا سنائی گئی۔

کلبھوشن کا مقدمہ آرمی ایکٹ کے تحت فیلڈ جنرل کورٹ مارشل میں چلایا گیا تھا۔

سزائے موت کے اعلان کے بعد بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے گیڈر بھبھکی دیتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان کلبھوشن کی سزا کے فیصلے کے نتائج پر غور کرلے۔ دونوں ممالک کے تعلقات پر کیا اثر پڑے گا اس کا بھی جائزہ لے۔

بھارتی وزیرخارجہ نے کہا تھا کہ پاکستان دو طرفہ تعلقات کو پیش نظر رکھ کر کلبھوشن یادیو کے معاملے پر آگے بڑھے ورنہ سنگین نتائج بھگتنا پڑیں گے۔

Read more »

کلبھوشن یادیو جعلی نام لیکن تصدیق شدہ بھارتی پاسپورٹ کے ساتھ پاکستان کے دورے کررہاتھا

نئی دہلی (آئی این پی)بھارت میں تعینات پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط نے کلبھوشن کو قونصلر رسائی نہ دے کر دو طرفہ معاہدے کی خلاف ورزی سے متعلق بھارتی دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمارے درمیان دوطرفہ معاہدہ موجود ہے جس میں یہ واضح تحریر ہے کہ سیاسی اور سیکیورٹی سے متعلق معاملات پر فیصلہ میرٹ پر ہوگا، کلبھوشن یادیو کو بلوچستان سے گرفتار کیا گیا۔ بھارت کی سرکاری نیوز ایجنسی پریس ٹرسٹ آف انڈیا(پی ٹی آئی)کی ایک رپورٹ کے مطابق عبدالباسط نے انٹرویو کے دوران کہا کہ قونصلر رسائی کے دوطرفہ معاہدے کے مطابق، سیاسی اور سیکیورٹی

سے متعلق کیسز میں فیصلہ میرٹ پر کیا جائے گا۔نیوز ایجنسی کا کہنا تھا کہ کلبھوشن یادیو تک قونصلر رسائی کے لیے بھارت نے پاکستان سے 15 مرتبہ درخواست کی ہے۔عبدالباسط کا کہنا تھا کہ ‘ہمارے درمیان دوطرفہ معاہدہ موجود ہے جس میں یہ واضح تحریر ہے کہ سیاسی اور سیکیورٹی سے متعلق معاملات پر فیصلہ میرٹ پر ہوگا’۔ان کا کہنا تھا کہ ‘اس لیے اب تک ہم نے ریاست کے قانون اور بھارت سے ہونے والے دو طرفہ معاہدے کے مطابق سخت فیصلہ کیا ہے، ہم نے کسی چیز کی خلاف ورزی نہیں کی’۔عبدالباسط نے کہا کہ ‘ہم اپنے قانون اور ساتھ دو طرفہ معاہدے اور عزم کے مطابق کارروائی کررہے ہیں’۔پاکستانی ہائی کمشنر کا مزید کہنا تھا کہ کلبھوشن یادیو کو بلوچستان سے گرفتار کیا گیا، انھوں نے بھارتی دعوں کو مسترد کیا کہ ان کے جاسوس اور حاضر سروس نیول افسر کو ایران سے اغوا کیا گیا تھا۔انھوں نے کہا کہ بھارتی جاسوس 2003 سے مستقل پاکستان کے دورے کررہا تھا اور اس کے پاس ‘مبارک حسین پٹیل’ کے نام سے بھارت کا تصدیق شدہ پاسپورٹ موجود تھا۔اس سے قبل عبدالباسط نے انڈیا ٹو ڈے کو ایک انٹرویو کے دوران کہا تھا کہ ‘ہمیں یہ سمجھنا چاہیے کہ کلبھوشن یادیو جعلی نام لیکن تصدیق شدہ بھارتی پاسپورٹ کے ساتھ 2003 سے پاکستان کے دورے کررہاتھا، یہ بات آپ کو ہمیں بتانی ہے کہ وہ درست بھارتی پاسپورٹ پر جعلی نام کے ذریعے سفر کیوں کررہا تھا’۔کلبھوشن یادیو کو اس کے اہل خانہ سے ملاقات کی اجازت دیئے جانے کے حوالے سے سوال پر پاکستانی ہائی کمشنر کا کہنا تھا کہ یہ سوال قبل از وقت ہے جیسا کہ کارروائی کا عمل ابھی جاری ہے۔واضح رہے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو 3 مارچ 2016 کو بلوچستان کے علاقے ماشکیل میں ایک آپریشن کے دوران پاکستان میں امن و امان کو سبوتاژ کرنے کی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔کلبھوشن یادیو کو رواں ماہ کے آغاز میں فوجی ٹربیونل نے ملک میں دہشت گردی کی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کا الزام ثابت ہونے اور اس حوالے سے اعتراف پر سزائے موت سنائی تھی۔کلبوشن یادیو پر بھارت کے لیے جاسوسی کرنے، پاکستان میں دہشت گردی کی معاونت کرنے اور پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کے الزامات ہیں۔

Read more »

بھارت ماتا کے بیٹے کے خلاف مکمل ثبوت ہیں , پاکستانی سفیر عبدالباسط

نئی دہلی(این این آئی) بھارت میں تعینات پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط نے کہاہے کہ بھارتی خفیہ ایجنسی را کے جاسوس کلبھوشن یادیو کے خلاف پاکستان کے پاس کافی ثبوت ہیں، جبکہ اس پر جو الزامات تھے اس کا ٹرائل سول عدالت میں نہیں ہوسکتا تھا۔بھارتی ٹی وی چینل کو دیئے گئے انٹرویو میں عبدالباسط نے کہا کہ پاکستان کے پاس کلبھوشن یادیو کے خلاف کافی ثبوت موجود ہیں جو بھارتی حکومت کو بھی دیئے گئے، جبکہ وہ پاکستان میں تخریب کاری اور دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث تھا۔انہوں نے کہا کہ ’کلبھوشن یادیو 2003 سے جعلی نام کے ساتھتا جاتا رہا ہے، اس کے پاس بھارتی پاسپورٹ موجود ہے، وہ بھارتی نیوی کا حاضر افسر ہے اور پر جو الزامات تھے ان کے تحت اس کا ٹرائل سول عدالت میں نہیں ہوسکتا تھا، اس لیے اس کا ٹرائل پاکستان آرمی ایکٹ 1952 کے تحت ملٹری کورٹ میں کیا گیا۔پاکستانی ہائی کمشنر نے واضح کیا کہ اجمل قصاب کے معاملے کو کلبھوشن سے نہیں ملایا جاسکتا، جبکہ ممبئی حملے مقدمے میں تاخیر کا ذمہ دار پاکستان کو نہیں ٹھہرایا جاسکتا۔ان کا کہنا تھا کہ ’کلبھوشن یادیو نے اپنے جرائم کا اعتراف کیا اور اس کی مدد سے کئی دہشت گردوں کو گرفتار کرکے تخریبی کارروئیاں ناکام بنائی گئیں، جبکہ سزا سنائے جانے کے باوجود اسے اپیل کا حق حاصل ہے۔عبدالباسط نے کہا کہ ’کلبھوشن اکیلا نہیں ہے جس کے خلاف ملٹری کورٹ میں مقدمہ چلا، بلکہ کئی پاکستانی شہریوں کے فوجی عدالتوں میں مقدمات چلائے گئے، جبکہ کلبھوشن کو وکیل کی سہولت بھی دی گئی تھی۔

Read more »

Scroll Up